عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم مَرَّ عَلَى صُبْرَةِ طَعَامٍ فَأَدْخَلَ يَدَهُ فِيهَا فَنَالَتْ أَصَابِعُهُ بَلَلاً فَقَالَ: مَا هَذَا يَا صَاحِبَ الطَّعَامِ. قَالَ أَصَابَتْهُ السَّمَاءُ يَا رَسُولَ اللَّهِ. قَالَ أَفَلاَ جَعَلْتَهُ فَوْقَ الطَّعَامِ كَىْ يَرَاهُ النَّاسُ مَنْ غَشَّ فَلَيْسَ مِنِّي

It was narrated from Abu Hurairah that the Messenger of Allah ﷺ passed by a pile of foodstuff; he put his hand (deep) in it and found that it had gotten wet. He said: “What is this, O seller of the foodstuff?” He said: “It got rained on, O Messenger of Allah.” He ﷺ said: “Why don’t you put it on top of the food so that people can see it? Whoever deceives (people) does not belong to me.”

ابوہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم غلہ کے ایک ڈھیر پر سے گزرے آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے اس میں اپنا مبارک ہاتھ ڈالا تو انگلیاں تر ہوگئیں، آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے غلہ کے مالک سے پوچھا کہ یہ کیا ہے؟ اس نے عرض کیا اے اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم یہ بارش کی وجہ سے بھیگ گیا ہے آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا کیا تم یہ تر حصہ اوپر نہیں کر سکتے تھے کہ لوگ اس کو دیکھ لیتے پھر فرمایا جس نے دھوکا کیا، اس کا مجھ سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

[Sahih Muslim, Book of Faith, Hadith: 102 (284)]
Chapter: The saying of the Prophet ﷺ: “Whoever deceives us is not one of us.”

SHARE
Previous articleImportance of Salah

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here