سُرَاقَةَ بْنِ جُعْشُمٍ قَالَ سَأَلْتُ رَسُولَ اللَّهِ ـ صلى الله عليه وسلم ـ عَنْ ضَالَّةِ الإِبِلِ تَغْشَى حِيَاضِي قَدْ لُطْتُهَا لإِبِلِي فَهَلْ لِي مِنْ أَجْرٍ إِنْ سَقَيْتُهَا فَقَالَ: نَعَمْ فِي كُلِّ ذَاتِ كَبِدٍ حَرَّى أَجْرٌ

It was narrated that Suraqah bin Ju’shum said: I asked the Messenger of Allah ﷺ about a lost camel that comes to my cisterns (water reservoir) that I have prepared for my own camels – will I be rewarded if I give it some water to drink? He ﷺ said: Yes, in every living being there is reward.

سراقہ بن جعشم رضی اللہ تعالیٰ عنہ فرماتے ہیں کہ میں نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم سے پوچھا کہ گمشدہ اونٹ میرے حوضوں پر آجاتے ہیں جنہیں میں نے اپنے اونٹوں کیلئے تیار کیا تو اگر میں ان گمشدہ اونٹوں کو پانی پلاؤں تو مجھے اجر ملے گا؟ فرمایا جی ہاں ہر کلیجہ والی (زندہ چیز جس کو پیاس لگتی ہو کوپانی پلانے اور کھلانے) میں اجر ہے۔

[Sunan Ibn Majah, Book of Etiquette, Hadith: 3686]
Chapter: The Virtue of giving water in charity.
Grade: Sahih

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here